آئی ایم کراچی کے تحت یوتھ پوائنٹ لیاری میں ڈائیلاگ سر کا سفر کا انعقاد کیا گیا.

سرکا سفر کے عنوان کے تحت ایک ڈائیلاگ کا اھتمام آئی ایم کراچی نے روز یوتھ پوائنٹ لیاری کے تعاون سے منعقد کیا جس میں مشہور انٹرنیشنل گلوبل ایوارڈ یافتہ بینجو نواز جناب ممتازسبزل۔ معروف ڈیزائنر اور فن موسیقی سے وابستہ شخصیت یوسف بشیر قریشی صاحب اور جناب جلیل ابراھیم مہمان تھے اور میزبانی کے فرائض جناب عمیر پراچہ آئی ایم کراچی نے انجام دئیے۔
Lyari I Am Karachi Dialogue
فنٍ موسیقی کے بارے میں اس ڈائیلاگ میں شریک ممتاز سبزل نے اپنے فنٍ موسیقی اور اپنے بزرگوں کا ذکر کیا جو چوتھی نسل تک اس فن کو وہ زندہ کئے ھوئے ھیں۔
انہوں نے نوجوان نسل کے لیے اپنی خدمات کا ذکر کیا جنہیں گھروں اور کلبوں میں جاکر درس و ریاض دیتے ھیں۔

انہوں نے حکومت کی اس رویے سے اختلاف کیا جو وہ موسیقار و دیگر فنون سے وابسطہ لوگوں سے رکھتی ہے۔ کہ کس طرح ریٹائرمنٹ کی عمر میں موسیقاروں کو بے یار و مددگار چھوڑا جاتا ہے اور وہ سسک سسک کر اس جہان کو چھوڑ جاتے ھیں۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس ضمن میں حکومت کو اپنی واضع پالیسی بنانی چائیے تاکہ فن کاروں کو آخری ایام میں مدد مل سکے۔

یوسف بشیر قریشی صاحب نے بھی ڈائیلاگ میں حصہ لیتے ھوئے فن موسیقی کے زوال کے اسباب بتائے اور اس بات کا اظہار کیا کہ جو سٌر وسنگیت پرانے ادوار میں تھیں ان کی چاسنی اب بھی لوگوں کی ذھنوں میں زندہ ھے۔ مگر افسوس کہ وہ موسیقی آج ناپید ھے۔

جلیل ابراھیم صاحب نے موسیقی کو بزنس بنانے اور پرانی موسیقی کی تقلید نہ کرنے کے وجوھات پر تنقید کی اور حکومت کی سطح پر جامع پالیسی بنلنے کا مطالبہ کیا تاکہ موسیقی کو ایک صیح سمت ملے۔

آخر میں حاضرین نے سوالات کئے جن کے جوابات تمام مہمانوں نے بڑے انہماک سے دئیے۔
آخر میں جناب عمیر پراچہ نے تمام مہمانوں اور حاضرین کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے اپنے قیمتی وقت سے کچھ وقت نکال کر آئے اور اس ڈائیلاگ کا حصہ بنے۔
ایسے پروگرام کا انعقاد لیاری کی سطح پر ھونا ایک پر امن لیاری کی نوید ھے۔

رپورٹ: عبدالعزیز اآسکانی (چیف رپوورٹر)