لیاری کا دل، ہشت چوک‌ (آٹھ چوک)

تحریر: شبیر احمد ارمان
لیاری میں واقع چاکیواڑہ کی حدود میں ہشت چوک اپنی اہمیت و افادیت کے باعث لیاری کا اہم مرکزی مقام ہے، جو ملکی اور بین الاقوامی سطح پر مشہور ہے.
اس چوک سے منسلک آٹھ بڑے اور چھوٹے روڈز ہیں جن میں شیدی ویلیج روڈ، حاجی پیر محمد روڈ، ٹینری روڈ، عقب محمد علی بلڈنگ روڈ اور لیاری زونل آفس عقب والی سڑک شامل ہیں. اس چوک کے اردگرد قائم گڈز ٹرانسپورٹ کے زریعے اندرون بلوچستان کے لئے کھانے پینے اور دیگر ضروریات زندگی کی اشیاء کی تجارت بھی کی جاتی ہے. یہاں ٹریول ایجنسیوں کے دفاتر بھی ہیں. اس کے قرب و جوار میں بلند و بالا رہائشی ہوٹل بھی قائم ہیں جہاں اکثر و بیشتر اندرون بلوچستان اور ایران سے آئے ہوئے مسافر ٹھہرنے آتے ہیں.
ہشت چوک کے چاروں اطراف میں چھوٹی بڑی دکانیں بھی ہیں جن میں فروٹ فروش، مٹھائی، دودھ دہی، بیکری، بن کباب، جنرل اسٹوراور دیگردکانیں شامل ہیں. اس کے علاوہ یہاں رکشہ اور ٹیکسی اسٹینڈ بھی ہیں اور قریب میں ایک بابا کا مزار بھی ہے جہاں عقیدت مند اکثر و بیشتر حاضرے کے لیے آتے رہتے ہیں.
گزرے وقت میں چوک پوٹل اور لطیف پکوڑے والا بہت مشہور تھے. جبکہ اس چوک کے ایک کونے پر جانوروں کے لیے اسطبل بھی تھا. گھوڑا گھاڑی، اونٹ گاڑی اور گدھا گاڑی والے اپنے جانوروں کو پانی پلاتے تھے. اب اس جگہ ایک اخبار فروش کا اسٹال لگتا ہے.
وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اس کے اردگرد کی سڑکیں کشادہ کرنے کے لیے روڈ کٹنگ بھی کی گئی جس کی زد میں لاتعداد دکانیں اآگئی تھیں.
کچھ عرصے قبل ہشت چوک کے راوّنڈ آباوّٹ کی ازسر نو تعمیر کرکے اس کی تزئین و آرائش کی گئی. اس پر خوبصورت آبشار نما فوارے لگائے گئے. جس پر جلتی بجتی رنگ برنگی بتیاں بہت ہی دل کش مناظر پیش کرتی تھیٰں. چوک پر بنایا گیا سبزہ زار اس کی خوبصورتی کو مزید نکھار دیتا تھا.
پھر نہ جانے کس کی نظر اس کو لگ گئی کہ پہلے والی خوبصورتی اب نہ رہی. شاید پانی کی عدم دستیابی، بجلی کی کمی، غیر مناسب دیکھ بھال اور وسائل کی کمی نے مل کر لیاری کے دل ہشت چوک ہو ویران کردیا ہے. علاقے کے سماجی حلقے اس چوک کی خوبصورتی چاہتے ہیں. تاکہ میگاسٹی کراچی کا جب بھی ذکر ہے تو اس خوبصورت چوراہے کا بھی اس میں شمار ہو.